6

*ایک جملہ سُپریم کورٹ میں بھی بولا تھا آج بھی بول رہا ہوں کہ اغوا برائے بیان ، یہ کیس بھی ’’اغواء برائے بیان‘‘ کا ہے ، 2 ہزار دن بعد رجوع کرنا،طلاق نامہ پر تاریخ پر ٹیمپرنگ کرنا اور خاور مانیکا کا گرفتار ہونا یہ میرے پوائنٹس ہیں، بشریٰ بی بی کے وکیل بیرسٹر سلمان صفدر کے دلائل مکمل،آپ کہتے ہیں عدت کے دوران نکاح ہوا تو

*ایک جملہ سُپریم کورٹ میں بھی بولا تھا آج بھی بول رہا ہوں کہ اغوا برائے بیان ، یہ کیس بھی ’’اغواء برائے بیان‘‘ کا ہے ، 2 ہزار دن بعد رجوع کرنا،طلاق نامہ پر تاریخ پر ٹیمپرنگ کرنا اور خاور مانیکا کا گرفتار ہونا یہ میرے پوائنٹس ہیں، بشریٰ بی بی کے وکیل بیرسٹر سلمان صفدر کے دلائل مکمل،آپ کہتے ہیں عدت کے دوران نکاح ہوا تو خاور مانیکا نے دوران عدت درخواست کیوں نہیں دی ، جج افضل مجوکا کا زاہد آصف کے معاون وکیل سے استفسار، کیس کی سماعت 9:30بجے تک ملتوی۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں